سی پیک

سی پیک کے بیشتر منصوبے مکمل

سی پیک
سی پیک کے بیشتر منصوبے مکمل ہو چکے ہیں

 

چین کے قونصل جنرل لی بیجیان نے پیر کو کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پی ای سی) کے تحت زیادہ تر منصوبے مکمل ہوچکے ہیں، جب کہ گوادر کا خطہ مزید اہم ہوگیا ہے۔

کورنگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کے دفتر کے دورے کے دوران ایلچی نے کہا کہ چین نے ہوائی اڈے، تربیتی مرکز اور گوادر سمیت مختلف منصوبوں میں سرمایہ کاری کی ہے۔

مجھے خوشی ہے کہ سی پیک کی وجہ سے پاکستان میں بجلی کا بحران ختم ہو گیا ہے۔ گوادر ہوائی اڈے کا ترقیاتی کام 90 فیصد مکمل ہو چکا ہے اور توقع ہے کہ 2023 میں کام شروع ہو جائے گا۔

سفارت کار نے کہا کہ گوادر میں ایک ہسپتال بھی تعمیر کیا جا رہا ہے، جس کے اگلے سال شروع ہونے کی امید ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک پاک چین دوستی کا ایک اہم حصہ ہے۔

سفیر نے زور دے کر کہا کہ پاکستانی صنعتکاروں اور سرمایہ کاروں کے لیے چین میں کاروبار کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ انہوں نے کہا، “چین میں 500 ملین کی متوسط طبقے کی آبادی ہے جو پاکستان کے لیے ایک بہت بڑی مارکیٹ ہو سکتی ہے۔”


انہوں نے کہا کہ پاکستان چین کو پھل اور سبزیاں برآمد کر سکتا ہے جبکہ چین کے پاس سمندری خوراک کی بہت بڑی مارکیٹ ہے جس سے پاکستانی برآمد کنندگان بھرپور فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

اس کے علاوہ دونوں ممالک کے درمیان آئی ٹی اور الیکٹرک گاڑیوں کے شعبے میں تعاون کو مزید بڑھایا جا سکتا ہے۔

چینی سفیر نے کہا کہ دونوں ممالک تجارت کے ذریعے پاکستان کی برآمدات کا حجم بڑھانے کے لیے حکمت عملی پر کام کر سکتے ہیں۔

انہوں نے پاکستانی صنعتکاروں پر زور دیا کہ وہ دونوں ممالک کے درمیان آزاد تجارتی معاہدے سے فائدہ اٹھائیں۔

کاٹی کے صدر سلمان اسلم نے کہا کہ اقتصادی راہداری منصوبہ دونوں ممالک کی معیشت کے لیے اہم ہے۔

کاٹی کے سابق چیئرمین دانش خان نے کہا کہ چینی سرمایہ کار پاکستان میں صنعتیں لگائیں اور پاکستانی مصنوعات کو فروغ دینے کے لیے چین کے ساتھ مشترکہ تجارتی میلے منعقد کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

سی پیک

 

Important Links

NEW JOBS 2022 jang NEWS GOVERNMENT JOBS 2022

New Government Jobs in Pakistan Army Unit 2022

               Latest RecruitmentPIC New Jobs 2022PIC New Jobs 2022

Latest Jobs

 

Leave a Comment

Your email address will not be published.

Scroll to Top